Author Topic: ذیابیطس : اسباب اور بچائو  (Read 1637 times)

Offline Seema Naaz

  • T. Members
  • 5 Stars
  • *****
  • Posts: 4726
  • Reputation: +383/-15
  • Gender: Female
    • View Profile
ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« on: April 28, 2017, 10:25:43 am »
ذیابیطس : اسباب اور بچائو



 
ڈاکٹر سندھو لغاری
انسولین ایک ہارمون ہے جو ہمارے خون میں گلوکوز کی مقدار کو بڑھنے سے روکتا ہے۔ یہ خون میں شامل گلوکوز کو جسم کے خلیوں تک لے جاتا ہے جہاں اس کی ضرورت ہوتی ہے کیونکہ اس سے توانائی بنتی ہے۔ اگر ہمارے جسم میں انسولین بننا کم ہوجائے یا اس کا کام یا اثر کم ہو جائے تو ہمارے خون میں گلوکوز بڑھ جائے گا کیونکہ یہ خلیوں کو منتقل نہیں ہوگا۔ اس عمل کو ہائپر گیسیمیا کہتے ہیں۔۔ اگر آپ ہائپرگالیسیمیا کا شکار ہیں تو اس کا مطلب ہے آپ کو ذیابیطس ہے۔ دنیا بھر میں8۔3 فیصد افراد ذیابیطس کا شکار ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق آئندہ سالوں میں اس کے مریضوں کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ہو جائے گا۔ ذیابیطس تین قسموں کی ہوتی ہے۔ ایک کو ٹائپ ون کہا جاتا ہے۔ دوسری ٹائپ ٹو اور تیسری جیسٹیشنل ذیابیطس کہلاتی ہے۔ ٹائپ ون چھوٹے بچوں یا پھر 25 سال سے کم عمر نوجوانوں میں ہوتی ہے۔ اسے روکنے کا ابھی تک کوئی طریقہ معلوم نہیں ہوسکا۔ ان مریضوں میں انسولین کی مقدار بہت کم بنتی ہے اس لیے ان کا علاج صرف انسولین کے استعمال ہی سے ممکن ہے۔ جب کہ ذیابیطس ٹائپ ٹو 30،35 سال یا زائد عمر کے لوگوں میں ہو سکتی ہے۔ نوے فیصد مریض اسی قسم کی ذیابیطس میں مبتلا ہوتے ہیں۔ بڑھتی عمر، موٹاپا اور روزمرہ زندگی میں جسمانی محنت سے گریز کرنے سے اس کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ اس لیے وزن کم کرنا اور ورزش کرنا ذیابیطس کو روک سکتا ہے یا کم از کم اس میں تاخیر لا سکتا ہے۔ تیسری قسم جیسٹیشنل ذیابیطس ان عورتوں کو متاثر کرتی ہے جو ماں بننے والی ہوتی ہیں۔ دوران حمل کچھ ہارمونز کے بڑھنے کی وجہ سے ان عورتوں میں انسولین کی مدافعت یا انسولین ریززٹنس ہوجاتی ہے جس سے ان کے خون میں شکر بڑھ جاتی ہے۔ اگر خون میں شکر کی مقدار کو کنٹرول نہ کیا جائے تو یہ بچے کے لیے جان لیوا ہوسکتی ہے۔ اس کے علاوہ یہ بچے میں بہت سے نقائص کا سبب بھی بن سکتی ہے۔ ذیابیطس کی اس قسم کا زیادہ تر انسولین ہی سے علاج کیا جاتا ہے کیونکہ دوران حمل بہت سی گولیوں کے اثرات کے بارے میں ابھی تک یقین سے نہیں کہا جاسکتا کہ وہ پیدائش سے قبل بچے کے لیے محفوظ ہیں یا نہیں۔ تاہم ایک دو قسم کی گولیوں کا استعمال پھر بھی ممکن ہے۔ حمل کے ابتدائی 16 سے 24 ہفتوں میں ذیابیطس کی اسکریننگ اس کی تشخیص میں کارآمند ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں ذیابیطس کے مریضوں میں اضافہ تیزی سے ہو رہا ہے ۔جس کی وجہ روزمرہ زندگی میں جسمانی مشقت سے گریز، وزن کا بڑھنا، شکر سے بھرپور ڈرنکس اور کھانے ہیں۔ ان تینوں اسباب کا آپس میں تعلق ہے۔ شکر کا زیادہ استعمال، کم چلنا پھرنا اور ورزش نہ کرنا موٹاپے کا کارن بنتا ہے۔ موٹاپے کی وجہ سے انسولین کی مدافعت پیدا ہوتی ہے جس سے اس کا اثر کم ہوتا ہے۔ ورزش سے خون میں موجود گلوکوز کو خلیوں تک جانے کے لیے انسولین کی ضرورت نہیں پڑتی اور اس سے انسولین کی حساسیت یا اثر بھی بڑھتا ہے۔ اس لیے ورزش ذیابیطس ہونے کے بعد بھی خون میں گلوکوز کی مقدار کم کرنے میں مدد دیتی ہے۔  جی سٹیشنل ذیابیطس  کے مریضوں کے لیے بھی ورزش مفید ہے۔ ذیابیطس خون کی چھوٹی شریانوں کو نقصان پہنچاتی ہے جس کی وجہ سے آنکھوں، گردوں اور دل کی بیماریاں ہو سکتی ہیں۔ خون کی شریانیں متاثر ہونے کی وجہ سے پاؤں پر زخم یا السر بن جاتے ہیں جسے ڈابیٹک فٹ کہا جاتا ہے۔ شریانوں کو مکمل طور پر نقصان پہنچنے کی صورت میں پاؤں یا ٹانگ کٹ بھی سکتی ہے۔ دنیا میں ہر 30 سیکنڈ میں ایک عضو ذیابیطس کی وجہ سے ضائع ہوتا ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ انگوٹھا، انگلیاں یا پاؤں ہر 30  سیکنڈ میں ذیابیطس کی وجہ سے کاٹنا پڑتا ہے۔ ۔پوری دنیا میں 20سے 64 سال تک عمر کے لوگوں کے نابینا ہونے کا سب سے بڑا سبب بھی ذیابیطس ہے۔ اسی طرح پوری دنیا میں گردوں کے مکمل ناکارہ ہونے کاسب سے بڑا سبب ذیابیطس ہے۔ پوری دنیا میں دل کی بیماری کی وجہ سے مرنے والے مریض بھی زیادہ تر ذیابیطس میں مبتلا ہوتے ہیں۔ ذیابیطس کے مریض اور ایک نارمل انسان میں صرف ایک فرق ہے اور وہ ہے خون میں گلوکوز کا بڑھنا۔ اگر ذیابیطس کا مریض اپنی خون میں گلوکوز کی مقدار کو نارمل یا پھر نارمل کے قریب تر رکھے تو وہ ان بیماریوں سے بچ سکتا ہے۔ ٹائپ ٹو ذیابیطس کو روکا جاسکتا ہے۔ ریسرچ سے یہ بات ثابت ہوچکی کہ اگر ہم متوان غذا کا استعمال کریں، شکر والے ڈرنکس کم سے کم استعمال کریں، ورزش کریں اور اپنا وزن اپنے قد کی مناسبت سے رکھیں تو ہم ذیابیطس سے بچ سکتے ہیں یا پھر اس کا ہونا کافی عرصے تک روک سکتے ہیں۔ مگر جن حضرات کو ذیابیطس ہو چکی ہے وہ اوپر دیے گئے ہوئے اقدامات کر کے اپنا بلڈ شوگر لیول کنٹرول کر سکتے ہیں اور ذیابیطس کے مضر اثرات سے بچ سکتے ہیں۔  
مُمکن ہے ایسا وقت بھی ہو ترتیبِ وقت میں
دستک کو تیرا ہاتھ بڑھے اور میرا در نہ ہو

YUM Stories

ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« on: April 28, 2017, 10:25:43 am »

Offline dexter

  • nothhing is weird ! but might not be my choice
  • T. Members
  • 5 Stars
  • *****
  • Posts: 8463
  • Reputation: +411/-306
  • Gender: Male
  • I love to know,think,learn, understand and discuss
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #1 on: May 02, 2017, 10:11:01 pm »
bohat achi information share ki he seema

thanks for the share  and hopes to have more :)
mujhy apni kund zahani ki waja se akser dosron ki asaan baten samajh naheen aten:( © 2019

YUM Stories

Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #1 on: May 02, 2017, 10:11:01 pm »

Offline Seema Naaz

  • T. Members
  • 5 Stars
  • *****
  • Posts: 4726
  • Reputation: +383/-15
  • Gender: Female
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #2 on: May 03, 2017, 03:16:54 am »
bohat achi information share ki he seema

thanks for the share  and hopes to have more :)
Thank you Dexter , I will try  to share more .thanks
مُمکن ہے ایسا وقت بھی ہو ترتیبِ وقت میں
دستک کو تیرا ہاتھ بڑھے اور میرا در نہ ہو

Offline bleeding bir

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 177
  • Reputation: +2/-1
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #3 on: May 09, 2017, 05:05:38 pm »
Very nice dear God Bless u :-*

Offline malikamadhassan

  • 3 Stars
  • ***
  • Posts: 311
  • Reputation: +10/-1
  • Gender: Male
  • U Will never recognize who am I
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #4 on: June 18, 2017, 02:56:53 pm »
Good information thanx😊
U doñT Likë Me?
Get a map! Buy a car! And go to Hel 🖕🏻🖕🏻🖕🏻🖕🏻

Offline tabaxum

  • TÃBçÙM
  • T. Members
  • 6 Stars
  • ******
  • Posts: 11859
  • Reputation: +35/-10
  • Gender: Male
  • T7
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #5 on: July 29, 2017, 11:33:00 pm »
Seema je nice post hai
tHe tRuTh mAy hUrT fOr a lItTlE wHiLe, bUt a lIe hUrTs fOrEvEr.

Offline bleeding bir

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 177
  • Reputation: +2/-1
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #6 on: November 13, 2017, 03:55:18 pm »
Very Nice info dear


Offline Hirni

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 182
  • Reputation: +25/-5
  • Gender: Female
  • Jiyo aur Jeenay Do
    • View Profile
Re: ذیابیطس : اسباب اور بچائو
« Reply #7 on: June 24, 2018, 02:04:29 am »







The most recent research findings say that diabetes is a life-long condition; it can be managed and kept under contol, it is the result of errors in meatbolic pathways that are somehow embedded in a person's genes. If a person has genetic propensity (a history of diabetes in the family) chances of such a person becoming a diabetic increase dramatically.


The simplest definition of diabetes is GLUCOSE INTOLERANCE.



Please visit my profile and view my posts.

 

Adblock Detected!

Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors.
Please consider supporting us by disabling your ad blocker on our website.