Author Topic: Luck and fuck  (Read 310797 times)

Offline dewta_mastermind

  • T. Members
  • 5 Stars
  • *****
  • Posts: 1983
  • Reputation: +106/-3
  • Gender: Male
  • بہت انتظار کر لیا اب تو مل جا
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #24 on: March 27, 2020, 02:16:25 pm »
او جی او عرفان مانی کیا بات ہے مزہ آ گیا ۔ کیا کالو کی قسمت  چمکائی ہے
[/size]ویسے آئیڈیا آیا کہاں سے
تصویر بنا کہ میں تیری جیون دا بہانا لبھیا اے

توں نہ ملیوں وچھڑ کہ چن  سجناں اساں  سارا زمانہ لبھیا اے

YUM Stories

Re: Luck and fuck
« Reply #24 on: March 27, 2020, 02:16:25 pm »

Offline woodman

  • 3 Stars
  • ***
  • Posts: 453
  • Reputation: +5/-3
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #25 on: March 28, 2020, 01:28:06 am »
 :rockon: :rockon: :rockon: :rockon: :rockon:
987uk321 gmail

YUM Stories

Re: Luck and fuck
« Reply #25 on: March 28, 2020, 01:28:06 am »

Offline Irfanmani

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 62
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #26 on: March 28, 2020, 02:35:41 am »



اپ ڈیٹ 6


کچھ دیر بعد دونو ٹھنڈے ھو گئے تو کالو کو سحر سے شرم آنے لگی کالو سحر کے اوپر سے اٹھا اور اس کی سائیڈ میں بیڈ پر بیٹھ گیا سحر کا بھی شرم سے برا حال تھا چوت کا پانی نکلنے کے بعد وہ کالو سے نظر نہیں ملا پا رہی تھی وہ اپنے کپڑے ٹھیک کرتی ہوئی اٹھی اور سر جھکا کر بیٹھ گئی اس کی چوت ابھی تک سائیں سائیں کر رہی تھی جو مزہ اس نے ابھی چکھا تھا وہ آج سے پہلے اسے کبھی نہیں ملا تھا کالو کے لن میں اب بھی سرور تھا اور وہ سحر کی چوت کا میٹھا میٹھا احساس ابھی تک نہیں بھول پا رہا تھا دونو کو ایسا کر کے بہت مزہ آیا تھا اور دونو ہی دل ہی دل میں بہت خوش تھے صرف اوپر اوپر سے شرما رہے تھے دونو چپ تھے اور بیتے ہوئے لمحات کو یاد کر رہے تھا کہ اچانک ایک آواز سن کر چونک گئے
سحر کی امی نے چائ بنا لی تھی اور وہ اسے بلا رہی تھی اپنی امی کی آواز سن کر سحر کو کرنٹ لگا اور وہ جلدی سے بیڈ سے اٹھ کر کھڑی ھو گئی تو اس کو اپنی دونو رانو اور چوت کے آگے شلوار بھیگی ہوئی محسوس ہونے لگی سحر ڈر گئی کہ اس حال میں نیچے کیسے جائے اگر اس کی امی نے اس کی گیلی شلوار دیکھ لی تو غضب ھو جائے گا یہ سوچ کر سحر جلدی سے اپنی کپڑوں کی الماری کے پاس چلی گئی جو اس کے بیڈ کے پیروں کی طرف دیوار کے ساتھ کھڑی تھی سحر نے جلدی سے اپنے کپڑے نکالے اور باتھروم جانے لگی تو اس کے دل میں ایک شرارت آئی اور وہ ادھر ہی رک گئی اس نے چوری سے دیکھا تو کالو اس کو دیکھ رہا تھا سحر نے سمائل کی اور کالو کی طرف پیٹھ کر کے کھڑی ھو گئی جو کچھ وہ کرنے والی تھی وہ سوچ کر اس کی چوت دوبارہ گیلی ہونے لگی سحر کی الماری میں ایک قد آدم آئینہ لگا ہوا تھا وہ اس کے سامنے کھڑی ھو گئی اور کالو کو چوری چوری دیکھنے لگی سحر نے کالو پر نظر رکھتے ہوئے اپنی قمیض اتاری  تو کالو کا منہ کھل گیا وہ چوری چوری سحر کی خوبصورت اور صاف رنگ کی  پیٹھ  اور کمر دیکھنے لگ گیا سحر کالو کا کھلا منہ دیکھ کر سمائل کرنے لگی اور اس کی چوت اور بھیگنے لگی سحر  اپنی قمیض اتار کر اوپر سے ننگی ھو گئی تو اس کے جسم پر صرف ایک بلیک برا رہ گئی  جس میں اس کے بڑے بڑے ممے ٹائٹ کسے ہوئے تھے اور ادھے سے زیادہ نظر آ رہے تھے
سحر نے اپنی قمیض اتار کر الماری میں رکھ دی اور آئینے میں اپنے  آدھے سے زیادہ ننگے ممے دیکھ کر خود ہی شرما گئی
سحر کالو کو اپنا دیوانہ بنانے کا کوئی بھی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دینا چاہتی تھی اس نے آئینے میں کالو کا فیس  دیکھا تو وہ اس کی خوبصورت  اور ننگی پیٹھ پیٹھ کو آنکھیں پھاڑ پھاڑ کر دیکھ رہا تھا کالو کی نظر سحر کی پیٹھ پر رک نہیں رہی تھی وہ کبھی سحر کے خوبصورت شانے دیکھنے لگ جاتا تو کبھی اس کی بل کھاتی ہوئی  خوبصورت کمر دیکھنے لگ جاتا سحر کو  کالو کو اپنا جسم دکھانا اچھا لگ رہا تھا اور کالو کا شہوت بھری  نظروں سے اس کے جسم کو دیکھنا اور بھی مزا دے رہا تھا سحر نے کالو کو ایک اور جھٹکا دینے کا سوچا اور اس کی طرف گھوم گئی سحر کالو کو اپنے آدھے ننگے ممے دکھانے لگی تو اس کو شرم اور مزا دونو آنے لگی سحر کے جسم میں گدگدی ہونے لگی اور وہ کچھ شوخی دکھاتی ہوئی کالو سے ہنس کر بولی ۔ایسے آنکھیں پھاڑ پھاڑ کر  کیا دیکھ رہے ھو کیا کبھی کوئی خوبصورت لڑکی نہیں دیکھی
سحر کے خوبصورت اور آدھے ننگے  ممے دیکھتے ہوئے کالو کا دل دھک سے رہ گیا وہ سحر کی آواز سن کر ڈر گیا اور نا میں سر ہلانے لگا
سحر کالو سے کچھ اور نا بولی اور اس  کو اپنے مموں کی ایک جھلک دکھانے کے بعد واپس گھوم کر کھڑی ھو گئی اتنے میں ہی اس کا برا حال ھو گیا تھا اور اس کی چوت پانی چھوڑنے لگ گئی تھی  سحر کی چوت میں مزا آنے لگا اور  وہ سمائل کرنے لگی  اس نے الماری سے ایک قمیض نکلی اور  جلدی سے پہن لی تو اس کی جان میں جان آئی لیکن ابھی عشق میں امتحان اور بھی تھے اور سحر کی شلوار بدلنی باقی تھی
سحر کالو کو اپنا پورا جلوہ دکھانا چاہتی تھی اور اپنی اداوں کا محبوب بنا دینا چاہتی تھی سحر کو اپنے شلوار بدلنے میں شرم آ رہی تھی لیکن وہ یہ کام کالو سے چھپ کر نہیں کرنا چاہتی تھی
سحر آئینے میں کالو کو دیکھتی ہوئی جھکی اور اپنی شلوار نیچے سرکا کر اپنے پیروں سے نکل لی تو وہ نیچے سے پوری  ننگی ھو گئی لیکن اس کی قمیض کے دامن نے آگے سے اس کی چوت کو چھپا لیا اور پیچھے سے اس کی بڑی سی گانڈ  بھی ڈھک لی
کالو چوری چوری سحر کو دیکھ رہا تھا جب سحر نے اپنی شلوار اتاری تو اس کا کلیجہ منہ کو آ گیا
سحر کی دونو ٹانگیں صاف  اور بھری بھری تھی ان کی سکن بالوں سے پاک اور چمکیلی تھی سحر کی آدھی ننگی ٹانگیں دیکھ کر کالو کا برا حال ھو گیا اور اس کا لن کھڑا ھونے لگ  گیا
سحر کالو کے چہرے کے بدلتے ہوئے رنگ دیکھ رہی تھی اور اسے کالو کو اپنی ٹانگیں ننگی دکھانے میں مزا آ رہا تھا
سحر نے اپنی شلوار الماری میں رکھی اور دوسری اٹھا کر پہننے کے لیے جھک  لگی شلوار پہنتے ہوئے سحر کو مستی سوجھنے لگی تو اس کی چوت اور گیلی ہونے لگی سحر نے کالو پر نظر رکھتے ہوئے اپنی شلوار میں پیر ڈالے اور اپنی ٹانگوں پر کھینچنے لگی جب سحر نے اپنی شلوار گھٹنو تک پہن لی تو تھوڑی اور  جھک کر ھو گئی اور سحر اپنی شلوار اوپر کھینچتی ہوئی اپنی قمیض کا دامن پیچھے سے اوپر کرنے لگی اور اپنی بڑی سی گانڈ کی جھلک کالو کو دکھانے لگی  سحر کی بھری بھری رانوں  اور بڑی بڑی گانڈ کی جھلک دیکھتے ہوئے کالو کا لن فل  کھڑا ھو گا اور جھٹکے مارنے لگا
سحر نے اپنی شلوار پہن کر کالو کی طرف دیکھا تو اسے کالو کی گود میں بنا ہوا بڑا سا تمبو صاف نظر آ گیا سحر نے سمائل کی اور کالو کو ڈانٹ کر بولی ۔بہت بتمیز ھو تم
کالو گھبرا گیا اور بولا ۔باجی میں نے کیا کیا ہے
سحر کالو کے پاس گئی اور ایک جھٹکے سے اس کی گود میں بیٹھ گئی تو اس کا لن سحر کی بڑی سی گانڈ کے نیچے دب گیا اور اس کے چوتڑوں میں چبھنے لگی
سحر کالو کا لن اپنی گانڈ کے نیچے مسلنے لگی اور بولی ۔یہ کیا ہے
کالو کی گود میں سحر بیٹھی تو وہ ہکا بکا رہ گیا وہ سحر کی کمر پر ہاتھ رکھ کر اسے اپنی گود سے اٹھانے لگا  اور ہکلا کر بولا ۔کک ککا کچھ نہیں ہے
اپنی گانڈ کے نیچے کالو کا  سخت اور موٹا لن محسوس کرتے ہی سحر کی چوت میں پانی آ گیا وہ اٹھی اور روم سے باھر جاتی ہوئی بولی ۔میں ابھی تمہاری خبر آ کر لیتی ھوں 
سحر کی آواز میں غصہ نہیں تھا اس لیے کالو کو ڈر نا لگا سحر روم سے نکلی اور نیچے چلی گئی
 کالو کو آج سحر کے ساتھ آ کر بہت مزا آ رہا تھا اور وہ سحر کی ساری باتوں کو انجوائے کر رہا تھا  کیوں کہ وہ بھی تو یہی چاہتا تھا کالو کو سحر کے تیور دیکھ کر اندازہ ھو رہا تھا کہ بہت جلد بات بن جائے گی اور سحر اسے اپنی چوت دے دے  گی سحر کی چوت کے بارے میں سوچ کر ہی کالو  کا لن یوں سر ہلانے لگا جیسے با زبان خاموشی کہہ رہا ھو کہ فکر نا کرو کام بن جائے گا

Offline Irfanmani

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 62
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #27 on: March 28, 2020, 02:37:03 am »



اپ ڈیٹ 7


سحر جتنی تیزی سے نیچے گئی تھی اتنی ہی تیزی سے واپس آ گئی اس نے ایک چائ کالو کو دی اور ایک چائ خود لے کر اس کے ساتھ بیٹھ گئی
کالو چپ چاپ چائ پینے لگا اور سحر اس کا فیس دیکھنے لگی سحر کی تڑپ بڑھ رہی تھی اور وہ اپنی طلب پوری کرنے کے لیے ساری دیواریں گرا دینا چاہتی تھی سحر کو شوخی سوجھنے لگی اور کالو کو دیکھ دیکھ کر اس کی چوت گیلی ہونے لگی
سحر بولی ۔اب بولو جاتے ٹائم  میں نے کیا کہا تھا  تم سے
اب سحر میں پہلے سے زیادہ  ھمت آ گئی تھی  اور وہ کالو پر بھروسہ   کرنے لگی  تھی اسے اندازہ ھو گیا تھا کہ کالو کے ساتھ میں جو بھی کر لوں  وہ میری   بات کسی کو نہیں بتا ئے گا
کالو کو سب یاد تھا لیکن اس کو اب بھی سحر سے شرم آتی تھی
کالو بولا ۔باجی مجھے کیا پتا
 کالو کے دل میں بھی سحر کا ڈر کم ھو گیا تھا اور اسے اندازہ ھو گیا تھا  کہ اب سحر اس کی کسی بات پر  ناراض نہیں ہوتی
سحر بولی ۔اچھا تو یہ بات ہے یہ کیا ہے
سحر نے کپڑوں کے اوپر سے ہی کالو کا لن پکڑ لیا اور ہلانے لگی
کالو بولا ۔باجی آپ کو تو سب پتا ہے
کالو کو شرم آنے لگی اور وہ سحر کا ہاتھ پکڑ کر اپنے لن سے ہٹانے لگا
سحر بولی ۔اب کیا میں اس کو ہاتھ بھی نہیں لگا سکتی
سحر نے شوخی دیکھائی اور  زبر دستی کالو کا لن پکڑ لیا وہ  کالو کے لن پر ہاتھ پھیرنے لگی اور  مٹھی میں بھر بھر کر دبانے لگ گئی
کالو بولا ۔باجی میں نے ایسا تو نہیں کہا
کالو کو مزا آنے لگا اور اس نے سحر کا ہاتھ چھوڑ دیا کیوں کہ وہ اس کو ناراض نہیں کرنا چاہتا تھا
سحر بولی ۔کالو تم بہت چالاک ھو میرا سب کچھ دیکھ لیا اور مجھےاپنا  یہ بھی نہیں دیکھایا
کالو بولا ۔مجھے شرم آتی ہے
سحر بولی ۔تم خود دیکھاتے ھو یا میں خود دیکھ لوں
سحر کالو کی شلوار کھولنے لگی تو اس کو بہت شرم آنے لگی کالو نے سحر کے ہاتھ پکڑ لیے اور اسے روکنے لگ گیا
کالو بولا ۔باجی پلیز رک جایئں میں خود آپ کو دیکھاتا ھوں
سحر نے کالو کی شلوار چھوڑ دی اور اس کے لن کو دیکھنے لگی
سحر  بولی ۔اوکے تو پھر   دیکھاؤ
کالو  نے شرماتے ہوئے اپنی شلوار کھولی اور اپنا  ننگا لن باھر نکال لیا جس کو دیکھ کر سحر کی آنکھیں پھیل گئی اور منہ کھل گیا
کالو سانولا تھا لیکن اس کا لن بلکل کالا تھا جس کو دیکھ کر سحر کو خار آنے لگی اور وہ سوچنے لگی اتنا کالا لن میں  اپنی گولابی چوت میں کیسے لوں گی لیکن کالو کا لن کالا ہونے کے ساتھ ساتھ  کافی بڑا اور موٹا بھی تھا  جیسے دیکھ کر سحر پر شہوت سوار ہونے لگی
  کالو کا موٹا  تازہ اور اصلی  لن دیکھ کر سحر  کے منہ میں پانی آنے لگا اور چوت گیلی  ہونے لگی تو اس کو کالو کا لن بہت  خوبصورت اور پیارا لگنے لگا
سحر سے صابر نا ہوا اور اس نے کالو کے کالے  لن پر ہاتھ رکھ لیا کالو کا لن کسی پائپ کی طرح سخت اور کسی انگارے کی طرح گرم تھا جس  پر ہاتھ رکھتے ہی سحر کا ہاتھ جل گیا تو اس نے ایک جھٹکے سے اپنا ہاتھ کالو کے لن سے اٹھا لیا اور اسے خوف زدہ نظروں سے دیکھنے لگی
سحر بولی ۔کالو یہ تو تم سے بھی کالا ہے مجھے تو اس کو دیکھ کر ہی ڈر لگ رہا ہے  میں اس کو  پیار کیسے کروں گی
سحر کی بات کالو کو بہت بری لگی اور اس کا دل ٹوٹ گیا وہ سمجھ گیا کہ اس کا کالا لن سحر جیسی خوبصورت اور گوری  لڑکی کو پسند نہیں آیا
کالو کا منہ لٹک گیا اور اسے اندازہ ھو گیا کہ اس کے کالے لن کی وجہ سے سارا کام خراب ھو گیا ہے
کالو نے اپنا لن اندر کیا اور شلوار باندھنے لگا سحر اس کو ایسا کرتے دیکھ کر چونک گئی اور  بولی ۔ارے ارے یہ کیا ھو گیا ہے تم کو
کالو نے شلوار باندھ لی اور غصے سے  کھڑا  ہو گیا
کالو بولا ۔باجی مجھے سب پتا چل گیا ہے میرا لن کالا ہے اور وہ آپ کو پسند نہیں آیا اس لیے میں گھر جا رہا ھوں
یہ کہ کر کالو روم کے ڈور کی طرف چل پڑا سحر اس کو یوں جاتے دیکھ کر پریشان ھو گئی
سحر بولی ۔کالو رکو میری بات سنو میرے کہنے کا  مطلب وہ نہیں تھا جو تم سمجھ رہے ھو
کالو روم کا ڈور کھول کر باھر نکل گیا اور سیڑھی کی طرف جاتا ہوا بولا ۔باجی میں بچہ نہیں ھوں سب سمجھتا ھوں آج کہ بعد آپ کے گھر نہیں آؤں گا
سحر بیڈ سے اٹھی اور کالو کے پیچھے روم کے ڈور تک آئی لیکن تب تک کالو سیڑھیاں اتر کر گھر سے باھر جا چکا تھا
سحر نے اپنا سر پیٹ لیا کہ یہ کیا ھو گیا ہے مجھ  سے مجھے کالو سے ایسے نہیں کہنا چاہیے تھا  سحر مردہ قدموں سے چلتی ہوئی  بیڈ کے پاس گئی اور اس پر اوندھی گر کر سو گئی  کالو کے یوں روٹھ کر چلے جانے سے اس کو رونا آ گیا اور اس کی آنکھیں جھلمل جھلمل بہنے لگ گئی
سحر کے گھر سے باھر نکلتے ہی کالو کا غصے سے برا حال ھو گیا اور اسے اپنی قسمت پر  رونا آ گیا وہ اپنے کالے رنگ کو کوسنے لگا اور اپنی خالہ کے گھر کی طرف چل پڑا


Offline Irfanmani

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 62
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #28 on: March 28, 2020, 02:38:17 am »



اپ ڈیٹ 8


فضا اپنے روم میں بیٹھی تھی اور سحر اور  کالو کے بارے میں سوچ رہی تھی دونو کو گئے ہوئے کافی دیر ھو گئی تھی اور ان کی کوئی خبر نہیں آئی تھی فضا تھوڑی پریشان تھی اور سوچ رہی تھی کہ سحر کالو سے بات کر پاتی ہے یا نہیں فضا کو ایک اور بات بھی پریشان کر رہی تھی کہ کالو نے سحر کی کوئی بات اپنے کسی دوست کو نا بتا دی ھو
فضا کو یہ سب باتیں جاننے کی بہت بےچینی تھی اس نے دو تین بار سحر کو کال کرنے کے بارے میں سوچا لیکن کالو سحر کے ساتھ تھا یہ سوچ کر رک گئی وہ نہیں چاہتی تھی کہ کالو کو پتا چلے کہ وہ اس کی جاسوسی کرتی ہے فضا کالو کی ٹیچر  تھی اور ایسی چھوٹی موٹی باتوں سے اس کے سامنے اپنی امیج خراب نہیں کرنا چاہتی تھی
فضا کافی دیر انہی سوچوں میں ڈوبی رہی گھر کی ڈور بیل بجی تو اس کے دل کی دھڑکن تیز ھو گئی اور وہ سمجھ گئی کہ کالو آ گیا ہے
فضا کو کالو سے کچھ پوچھنے کی ھمت نہیں تھی  کیوں کہ وہ ویسے بھی سحر کے بارے میں اس کو کچھ نہیں بتاتا تھا اس لیے فضا نے اپنا موبائل اٹھایا اور سحر کو کال کی کافی دیر گھنٹی بجتی رہی لیکن سحر نے  اس کی کال اوکے نہیں کی فضا نے دو تین بار ٹرائ کی  لیکن جواب وہی رہا فضا پریشان ھو گئی ایسا کبھی نہیں ہوا تھا کہ فضا کال کرے اور سحر اس کا جواب نا دے فضا کو کچھ گڑ بڑ لگنے لگی وہ اپنے روم سے نکلی اور ہال میں آ گئی وہ کالو کا فیس دیکھ کر اندازہ لگانا چاہتی تھی کہ سب اوکے ہے یا کچھ گڑبڑ ھو گئی ہے
کالو ہال میں بیٹھا تھا اور اس کا منہ غصے سے  سوجا ہوا تھا وہ جھلایا ہوا تھا اور بار بار  tv کے چینل بدل رہا تھا
فضا کالو کا فیس دیکھتے ہی سمجھ گئی کہ کچھ تو گڑبڑ ہے اسے کالو سے کچھ پتا چلنے کی امید تو نہیں تھی لیکن اپنے زنانہ تجسس کے باعث کالو کے ساتھ بیٹھ گئی اور بولی۔ تم کب آئے
کالو کا غصہ کم نہیں ہوا تھا لیکن فضا کو دیکھ کر اس نے اپنا غصہ دبا لیا اور بولا ۔میم ابھی آیا ھوں
فضا نے پوچھا ۔سحر نے راستے میں تنگ تو نہیں کیا
کالو بولا ۔نو میم
فضا شوخی سے بولی ۔اچھا لیکن مجھے تو وہ بہت تنگ کرتی ہے
کالو بولا ۔کیوں میم
فضا بولی ۔یوں ہی بہت پاگل لڑکی ہے تم کو کیسی لگتی ہے
کالو بولا ۔میم مجھے تو بہت اچھی لگی ہے
کالو کے منہ سے سچ نکل گیا  تو وہ ڈر گیا کہ فضا کو اس پر شک نا ھو جائے لیکن فضا بھی بہت سیانی تھی اس نے کالو کو محسوس نہیں ہونے دیا کہ  وہ اس کے اور سحر کے بارے میں کچھ جانتی ہے
 فضا بولی  ۔کیوں اس میں ایسی کیا بات ہے
کالو گڑبڑا گیا اور بولا ۔میم میں نے تو بس ایسے ہی کہا ہے
فضا  نے سمائل کی اور کالو کو  کریدنے لگی لیکن اس نے بھی فضا کو سحر کی کوئی بات  نہیں بتائی
فضا کالو سے سحر کی باتیں کرتی کرتی تھک گئی لیکن کالو ٹس سے مس نا ہوا تو فضا زچ آ کر اپنے روم میں چلی آئی  اور اور بیڈ پر لیٹ کر  کالو کے بارے میں سوچنے لگی کہ کتنا پکا اور گھنا لڑکا ہے جو سحر کی کوئی بھی  بات مجھے نہیں بتاتا ہے  فضا کی انہی سوچوں میں دن سے شام ھو گئی
سحر کالو کے جانے کے بعد کافی دیر تک آنسو بہاتی رہی اس کا موبائل بجتا رہا لیکن اس نے کسی سے بات نہیں کی اور روتے روتے سو گئی
سحر شام کو اٹھی تو اس کا غم تھوڈا ہلکا ھو گیا تھا لیکن کالو کی یاد اب بھی اس کو ستا رہی تھی
سحر  اپنے بیڈ سے ٹیک لگا کر بیٹھ گئی اور کالو کو یاد کرتی ہوئی ہولے ہولے اپنی چوت پر ہاتھ پھیرنے لگی جو کالو کی یاد سے ہی گیلی ہونے لگ گئی
سحر نے موبائل اٹھا کر دیکھا تو فضا کی کافی مس کالز آئی ہوئی تھی اس وقت وہ کسی سے بات نہیں کرنا چاہتی تھی لیکن فضا کو اگنور کرنا اس کے دل کے بس کی بات نہیں تھی
سحر نے فضا کو کال کی اور پوچھا ۔ہاے یار کیسی ھو
فضا اپنے بیڈ پر لیتی ہوئی تھی وہ سحر کی آواز سن کر خوش ھو گئی اور چہک کر بولی ۔یار میں ٹھیک ھوں تم سناؤ کہاں گم ھو نا کوئی میسج کر رہی ھو اور نا ہی میری کسی کال کا جواب دے رہی ھو تم  ٹھیک تو ھو نا
سحر کی سوئی ابھی تک کالو پر اٹکی ہوئی تھی اور وہ اس کو یاد کرتی ہوئی اپنی چوت کے لیپس مسلنے لگی  اور بولی ۔یار نا پوچھو آج میں نے بنا بنایا کھیل خراب کر دیا اور کالو مجھ سے روٹھ کر چلا گیا ابھی تک اس کی یاد میں اپنی چوت مسل رہی ھوں
سحر کی بات سن کر فضا کی چوت گیلی ہونے لگی اور اس میں  پانی آنے لگ گیا
فضا بولی  ۔کیوں یار  ایسا کیا کر دیا تم نے کہ وہ ناراض ھو گیا کہیں  اس بات کی وجہ سے تم نے اس پی غصہ تو نہیں کیا
سحر کو اپنی چوت کے لیپس مسلنے میں مزا آنے لگا تو اس نے  اپنی شلوار میں ہاتھ گھسا دیا وہ اپنی ننگی چوت پر ہاتھ پھیرنے لگی  اور اپنی چوت کا دانا سہلانے  لگ گے
سحر بولی ۔نو یار اب مجھے کالو پر  بھروسہ ھو گیا ہے  وہ میری باتیں کسی کو نہیں بتاتا اس لیے آج میں نے اس کے ساتھ بہت مزے کیے اور اس کو بھی  بہت مزے دئے
فضا مزے کا  سن کر  اپنی چوت پر ہاتھ پھیرنے لگی اور اپنی چوت کے لیپس  مسلنے لگ گئی
فضا  بولی ۔یار کیسے مزے کچھ مجھے بھی تو بتاؤ
سحر کے اندر حسد کی آگ بھڑکنے لگی اور اس کی چوت میں اور خارش ہونے لگی وہ اپنی چوت کا دانا سہلاتی ہوئی اپنی ایک فنگر اپنی چوت کے لیپس میں رگڑنے لگی  اور بولی ۔یار میرے مزوں کا سن کر تیری چوت میں کیوں آگ لگ رہی ہے ایک بات میں تم کو صاف صاف بتا دوں کالو صرف میرا ہے اور اسے میں کسی کے ساتھ شیئر نہیں کروں گی
سحر کی بات سن کر فضا کی چوت میں زور زور سے پانی آنے لگا اور اس کی چوت کا سوراخ تیزی سے کھلنے اور بند ہونے لگ گیا
 فضا کا دل زور زور  سے دھک دھک کرنے لگا  اور وہ تیز تیز سانسیں لینے لگ گئی
فضا بولی ۔یار تو غلط سمجھ رہی ہے میرا کالو سے چوت مروانے کا کوئی ارادہ نہیں ہے میں تو صرف مزے کے لیے پوچھ رہی ھوں
فضا کی بات سن کر سحر کا ٹمپریچر کم ھو گیا اور وہ  اپنی  فنگر  تیز تیز اپنی چوت میں آگے پیچھے کرنے  لگ گئی
سحر  بولی ۔سوری یار کالو کا نام سنتے ہی میں بہک جاتی  ھوں اور مجھے اس کے سوا اور کوئی نہیں سوجھتا وہ میرے دل کے اتنا قریب ھو گیا ہے کہ میں اس سے دور رہنے کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتی
فضا سحر اور کالو کے بیچ آج جو کچھ ہوا وہ جاننے کے لیے بہت بیتاب  تھی وہ اپنی چوت پر ہاتھ پھیرتی ہوئی  اپنی چوت کا دانا مسلنے لگی اور اپنی ایک فنگر اپنی چوت کے لیپس میں رگڑنے لگی تو اس کو بہت مزہ آنے لگ گیا
فضا بولی ۔یار وہ سب تو ٹھیک ہے پہلے یہ بتا آج کیا ہوا تھا
سحر کالو کے بارے میں سوچ کر بہت گرم ہونے لگی تو اس کی چوت میں پانی آنے لگا سحر اپنی ننگی چوت کے لیپس میں اپنی  فنگر تیز تیز چلانے لگی اور اپنی چوت چودنے لگ گئی
سحر بولی ۔یار اپنے روم میں آنے کے بعد میں کچھ دیر کالو سے باتیں کرتی رہی پھر پتا نہیں مجھے کیا ہوا کہ میں اس کے گلے لگ گئی اور اس کو کس کرنے لگی کالو نے بھی مجھے باہوں میں بھر لیا اور مجھے کس کرنے لگا تو میں بے خود سی ھو گئی کالو نے مجھے بیڈ پر لیٹا دیا اور میرے اوپر چڑھ کر مجھے کس کرنے لگا اور میرے ممے دبانے لگا تو میں پاگل سی ھو گئی میں کالو سے لپٹ گئی اور میں نے اپنی ٹانگیں اس کی کمر میں باندھ لی کالو کا لن کھڑا ہوا تھا وہ  میری چوت سے ٹچ ہونے لگا کالو کو یہ بات پتا چل گئی تو وہ اپنے لن میری چوت کے لیپس میں زور زور سے  رگڑنے لگا مزے سے میرا برا حال ھو گیا اور میری چوت نے پانی چھوڑ دیا
سحر کی اتنی بڑی تفصیل سن کر فضا کا برا حال ھو گیا اور اس کی چوت کی لکیر میں پانی بہنے لگ گیا
فضا نے اپنی چوت مٹھی میں بھر لی اور اسے بہنے سے روکنے کی کوشش کرنے لگ گئی
فضا بولی ۔واہ یار تمہارے تو مزے ھو گئے کالو کا کیا بنا
 سحر کو اپنی چوت چودنے میں بہت مزہ آنے لگا اور  اس کی چوت سے  پانی رسنے لگا  اس کی فنگر گیلی ہو گئی  اور وہ اسے   اپنی چوت کے سوراخ پر پھیرنے لگ گئی
سحر بولی ۔یار کالو سے بھی میری چوت کی گرمی برداشت نہیں ہوئی اور اس نے اپنا لن میری چوت کے لیپس میں دبا دیا اور اپنا سارا پانی میری چوت گیلی پر نکال دیا 
فضا سے اب ضبط کرنا محال ھو گیا اس نے اپنی شلوار میں ہاتھ گھسا لیا  اور اپنی ننگی چوت کے لیپس میں فنگرز رگڑنے لگ گئی
فضا بولی ۔یار تو تو بہت کمینی ہے اس سے تو بہتر تھا تو اس بے چارے کو اپنی چوت ہی دے دیتی
سحر ہولے ہولے اپنی فنگر اپنی چوت کے سوراخ میں دبانے لگی تو اسے درد ہونے لگا سحر نے اپنی فنگر چوت کے سوراخ میں دبانی بند کر دی اور اپنی چوت کے لیپس میں رگڑنے لگی تو اس کا جسم اکڑنے لگ گیا
سحر بولی ۔یار اپنی چوت بھی اس کو دے دوں گی لیکن پہلے اس کو  منا تو لوں
فضا کی چوت میں بہت پانی آ  رہا تھا جس سے اس کی فنگرز گیلی ھو رہی تھی فضا اپنی گیلی فنگرز اپنی چوت کے لیپس میں رگڑ رہی تھی اور مزے لے رہی  تھی 
فضا بولی ۔یار اتنا سب ہونے کے بعد کالو تم سے ناراض کیوں ھو گیا کیا وہ پاگل تو نہیں
سحر اپنی چوت بیڈ سے اٹھا اٹھا کر اپنی فنگر اس میں رگڑنے لگی تو اس کی چوت تیزی سے کھلنے اور بند ہونے لگ گئی
سحر بولی ۔ نو یار اس میں اس بیچارے کا کوئی قصور نہیں ساری غلطی میری ہے
فضا کو اپنی چوت کے لیپس میں اپنی فنگرز رگڑنا بہت اچھا لگ رہی تھی اور وہ بار بار اپنی چوت میں اپنی فنگرز آگے پیچھے کر رہی تھی
فضا  بولی ۔یار وہ کیسے
کالو کے بارے میں سوچ کر سحر کی چوت کو ایک جھٹکا لگا اور اس میں سے پانی نکلنے لگا سحر فارغ ھو گئی اور تیز تیز سانسیں لینے لگی
سحر  بولی ۔یار میں نے کالو کے سامنے اپنے کپڑے چینج کیے اور اسے اپنا سارا جسم ننگا دیکھا دیا تو میرا دل بھی اس کا لن دیکھنے کے لیے مچلنے لگا
سحر کی بات سن کر فضا کی چوت میں اور پانی آنے لگا  وہ اپنی چوت کے لیپس مسلنے لگی اور ان میں اپنی فنگرز تیز تیز  رگڑنے لگ گئی 
فضا بولی ۔یار میں تو تجھے صرف کمینی سمجھتی تھی لیکن تو تو پوری کنجری بن گئی ہے تجھے شرم نہیں آئی اس کو  اپنا ننگا جسم دکھاتے ہوئے
سحر کی چوت کو اب قرار آ گیا تھا اور وہ اپنے ھی پانی سے بھیگی ہوئی تھی
سحر بولی ۔یار محبت اور جنگ میں سب جائز  ہے جب میں اس سے اپنی چوت مروانے کا سوچ چکی ھوں تو اسے اپنا جسم دکھانے سے کیا ڈرنا ویسے بھی اپنے محبوب سے اپنا حسن چھپایا نہیں جاتا بلکہ دیکھایا جاتا ہے تاکہ وہ کسی اور کے بارے میں نا سوچے
 سحر کی باتیں فضا کے تن بدن میں  آگ لگا رہی تھی اور اس کی شہوت اور بڑھا رہی تھی
فضا کی چوت جل رہی تھی اور پانی چھوڑنے کے لیے بیتاب تھی
فضا بولی ۔اوکے یار میں سمجھ گئی اب یہ بتا کالو تم سے  ناراض کیوں ھو
سحر اٹھ کر بیٹھ گئی اور اپنی گیلی شلوار سے اپنی چوت خشک کرنے لگ گئی
سحر بولی ۔یار میں نے کالو کا لن دیکھنے کی ضد کی تو اس نے دیکھا دیا اس کا لن کافی بڑا اور موٹا تازہ ہے لیکن کالا بہت ہے میں ڈر گئی اور بولی میں اس سے پیار کیسے کروں میں نے تو ایسے ہی کہا لیکن کالو برا مان گیا  اور  میری اسی بات سے ناراض ھو کر چلا  گیا
سحر سے کالو کے لن کے بارے میں سن کر فضا کے دماغ میں کالو کے لن کا  ایک تصور سا  بن گیا فضا نے اپنی آنکھیں بند کر لی اور کالو کے  کالے لن کا تصور کر کے اپنی فنگرز  اپنی چوت کے لیپس میں یوں رگڑنے لگی جیسے وہ اس کی فنگرز نہیں بلکہ کالو کا لن ھو فضا کو کالو کے لن کا تصور کر کے اپنی چوت میں  فنگرز  چلانے میں اور ھی مزہ آنے لگا اور وہ ایک دو جھٹکوں کے بعد جھڑ گئی تو تیز تیز سانسیں لینے لگی
فضا بولی ۔یار اگر تجھے کالو کا لن پسند نہیں تو اس کا پیچھا چھوڑ دے اس میں پریشان ہونے کی کیا ضرورت ہے
سحر اپنی چوت صاف کرنے کے بعد لیٹ گئی اور ہولے ہولے اپنی چوت تھپکنے لگ گئی
سحر بولی ۔یار بات ضرورت کی نہیں مجبوری کی ہے مجھے  کون سا کسی شہنشاہ کا لن ملنے والا ہے  جس کے انتظار میں بیٹھی  رھوں اس لیے جو مل رہا ہے اسے ہاتھ سے کیوں جانے دوں
فضا کی چوت سے آج تک اتنا پانی  نہیں  نکلا تھا جتنا کالو کے لن کے تصور سے اس نے چھوڑا تھا
فضا کالو کے لن کے  تصور سے شرمانے لگی اور سمائل کرنے لگ گئی
فضا بولی ۔یار اب  کیا کرو گی
سحر اپنی چوت پر ہاتھ پھیرنے لگی اور اپنی چوت کے لیپس سے کھیلنے لگ گئی
سحر بولی ۔یار دو چار دن صبر کرو پھر میں تمہارے گھر چکر لگاؤں گی تم بس میری اتنی سی  ہیلپ کرنا کہ کالو کو میرے ساتھ بھیج دینا باقی  میں سب سمبھال   لوں گی
سحر کی پلاننگ سن کر فضا کی چوت میں اور پانی آ گیا
فضا بولی ۔ٹھیک ہے یار میں تمہارے ساتھ ھوں
فضا نے سحر سے بات ختم کی اور کالو کے بارے میں  سوچنے لگی کالو کے لن کے بارے میں سوچ کر اس کا دل دھک دھک کرنے لگا اور چوت گیلی ہونے لگ گئی

Offline Irfanmani

  • 2 Star
  • **
  • Posts: 62
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #29 on: March 28, 2020, 02:39:21 am »





ہاے دوستو ۔اس بار آپ کے کمینٹ دیکھ  کر اندازہ ھو رہا ہے کہ آپ کو میری کہانی پسند آ رہی ہے اس بار کی اپ ڈیٹ بھی پڑھ کر ضرور بتانا  کیسی لگی

Offline Donseye143

  • 3 Stars
  • ***
  • Posts: 458
  • Reputation: +1/-4
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #30 on: March 28, 2020, 04:22:16 am »
Very nice boht hi hot update hai dear bas zara update jaldi dia karo boht achi story likh rahy ho zabardast

Offline Rehan979

  • 3 Stars
  • ***
  • Posts: 282
  • Reputation: +3/-1
    • View Profile
Re: Luck and fuck
« Reply #31 on: March 28, 2020, 10:08:34 am »
Nice update


Keep it up

 

Adblock Detected!

Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors.
Please consider supporting us by disabling your ad blocker on our website.