Author Topic: ناتمام سفر  (Read 10887 times)

Offline khanbaz

  • Newbie
  • Posts: 2
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
ناتمام سفر
« on: August 09, 2020, 11:23:34 pm »

بہت عرصے بعد حاضر خدمت ہوں۔ دوستوں ایک کہانی پیش کرونگا امید ہے آپ لوگوں کو پسند آئی گی ۔ یہ اصل زندگی کی کہانی ہے جس میں کرداروں کے نام اور جگہوں کے نام تبدیل کئے گئے ہیں تاکہ کسی کی زندگی پہ اثر انداز نہ ہو۔
یونیورسٹی سے فراغت کے بعد کئی سال گھر پہ ویسے گزارے تو ایک قسم کی بوریت سے طاری ہوگئی تو نوکری کی تلاش میں نکل پڑا۔ چونکہ میں خود ایک خان کا بیٹا ہوں اس لئے گھر میں معاش کی کوئی کمی نہیں تھی لیکن چونکہ طعبیت خودار سی ہے اس لئے خان بابا سے مانگتے ہوئے شرم آتی تھی اس لئے مور بی بی سے کہہ کہہ کر پیسے مانگتے ہوئے اچھا نہیں لگتا تھا۔
پہلی بار ایک نیشنل فرم میں ملازمت کی انٹریو دی تو مجھے سلیکٹ کردیا گیا اور میری تعیناتی چکوال کے ایک دورافتادہ گاوں کے ایک فارم پہ کردی گئی۔ گھر سے اجازت لے کر میں چکوال کے گاوں منڈی والہ پہنچ گیا ۔ یہ ایک چھوٹا سا گاوں تھا لیکن یہاں کی زمینیں بہت زرخیز تھی اس لئے یہاں ایک فارم بنایا گیا تھا جہاں کا مجھے انچارج بنا کر بھیجا گیا تھا۔ میں جب منڈی والا پہنچ گیا تو شام ہونے والی تھی اس لئے فارم پہنچا تو بہت تھک چکا تھا۔ یہاں دو کمروں کا ایک مکان کو کرائے پہ لیا گیا تھا جس کے ساتھ ملازم کے لئے بھی ایک کمرہ رکھا گیا تھا۔
میں جب پہنچا تو پہلے پہل ملازم نوردین سے ملاقات ہوگئی ، نور دین کی عمر تقریباََ پچاس سال کی ہوگی ، مجھ سے بہت پرتپاک سے ملے جو کہ گاوں کا ایک وطیرہ ہے۔ میں نے اپنے کمرے کا جائزہ لیا تو اس کو بہت سلیقہ سے سجایا گیا تھا دوسرا کمرہ بطور دفتر استعمال ہوتا تھا۔ کچھ دیر بعد نوردین چائے لیکر آگیا تو میں حیران رہ گیا کہ نوردین تم نے اتنی جلدی چائے کیسے بنا ڈالی تو نوردین ہنسا کہ صاحب جی میں نے کہاں بنائی ہے میرے بیوی نے بنائی ہے۔ تو میں نے پوچھا کہ کیا آپ کے بیوی بھی آپ کے ساتھ رہتی ہے تو اس نے کہا کہ صاحب میرا گاوں یہاں سے دور ہے تو اس لئے ہر روز جانا مشکل ہوتا ہے اس لئے ایک میں ہوں اور ایک میری بیوی ہے اس لئے ہم دونوں یہاں رہتے ہیں۔ میں نے پوچھا کہ نوردین بچے کتنے ہیں تو تھوڑا سا غمگین ہوکر کہا کہ صاحب میں والد کا اکلوتا تھا شاید اپ میرے بعد میرے باپ کی نشانی بھی ختم ہوجائے کیونکہ اللہ تعالیٰ نے اولاد کی نعمت سے محروم رکھا ہے۔

YUM Stories

ناتمام سفر
« on: August 09, 2020, 11:23:34 pm »

Offline rajraj

  • Newbie
  • Posts: 7
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: ناتمام سفر
« Reply #1 on: August 10, 2020, 02:20:41 am »
ناتمام ھے واقعی
یار کچھ لکھ لو پھر اپ ڈیٹ دے دینا

YUM Stories

Re: ناتمام سفر
« Reply #1 on: August 10, 2020, 02:20:41 am »

Offline khanbaz

  • Newbie
  • Posts: 2
  • Reputation: +0/-0
    • View Profile
Re: ناتمام سفر
« Reply #2 on: August 10, 2020, 11:29:58 pm »
یہ سن کر مجھے واقعی بہت دکھ ہوا کہ اس عمر میں بھی اس کو اپنی نسل کو بچانے کے اولاد کی تمنا ہے۔ بہرحال میں کچھ دیر کے لئے سستانے  لگا۔ جب نیند سے جاگا تو واش روم گیا تو حیرانگی ہوئی کہ سلیقہ سے تولیہ لگا ہے، بالٹی پانی کی بھری مجھے اتنا اندازہ ہوا کہ یہ نور دین کی بیوی نے یہ سب کیا ہے۔ بہرحال خوب نہانے کے بعد جب کمرے میں آیا تو نوردین کھڑا تھا کہ صاحب کھانا کس وقت لگاوں۔ تو میں نے کہا کہ ہم سب ایک ساتھ کھانا کھائیں گے تو نوردین نے کہا کہ صاحب یاسمین تو آپ کو دیکھ کر شرماتی ہے تو آپ کے ساتھ کیسے کھانا کھائے گی۔ تو میں نے کہا کہ اگر وہ ساتھ نہیں کھائے گی تو میں آپ لوگوں کا کھانا نہیں کھاونگا۔ بہرحال وہ کسی نہ کسی طور پہ راضی ہوگیا۔
بحرحال شام کو جب میں دسترخوان پہ بھیٹا تو یاسمین نوردین کی بیوی بھی آگئی ۔ میں حیران رہ گیا کہ اس بڑے عمر کی بیوی اتنی جوان اور خوبصورتی ہو سکتی ہے۔ بھرا بھرا جسم ،، اس پہ نسوانی حسن بھی لاجواب ۔ عورتوں میں حاصہ تجربہ رکھنے کی وجہ سے میں نے آنکھوں ہی انکھوں میں یاسمین کا ناپنا شروع کیا اس کے بریسٹ تقریباََ چالیس سے بڑے تھے، رنگ دھودیا ، جس بھی دیسی پنجابی فلموں کی ہیروئینوں کی طرح دلکش، ختم اس پہ کہ وہ ایک بھر پور عورت تھی۔

Offline kinlove

  • 1 stars
  • *
  • Posts: 31
  • Reputation: +0/-1
    • View Profile
Re: ناتمام سفر
« Reply #3 on: August 19, 2020, 08:34:17 pm »
Khanbaz bro, kiya howa???? update kab do gai????

 

Adblock Detected!

Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors.
Please consider supporting us by disabling your ad blocker on our website.